آج تک اس بیماری کا علاج کسی بھی ڈاکٹر نے نہیں

ڈاکٹر صاحب لا کڑا کاکڑایعنی چکن پاکس کا کوئی علاج بتادیں۔ آج کل وباء چل رہی ہے؟ اس کا علاج یہی ہے کہ اس کو نکلنے دو۔ اور یہ نکل جائےگا۔ جسم صاف ستھر ی ہوجائے گی۔ زندگی میں دوبارہ کبھی نہیں ہوگی۔اور اس کو روکنے کی کوشش مت کرو۔ اسی لیے جو سیانی مائیں ہوتی تھیں۔ وہ کہتی تھیں کہ اس کو منقہ ٰ کھلاؤ۔ اس کو چھوہاڑے کھلا ؤ۔ تاکہ اور نہ نکلے۔ اس کو نکلنے دینا چاہیے۔ ایک دفعہ پورے جسم پر نکلتا ہے اس کے بعد وہ چند دنوں میں ٹھیک ہوجاتا ہے۔ اس میں پریشان ہونے کی ضرورت نہیں ہے۔ کو وڈ ویکسین اور اس کے ممکنہ سائیڈ ایفیکٹ کے بارے میں آپ کی کیا رائے ہے؟

اسلام میں ہمیں اس کے متعلق کیا کہتا ہے؟ اس کےبارے میں کچھ نہیں کہہ سکتے۔ چکن پاکس یا لاکڑا کاکڑا ایک وبائی مرض ہے جس میں جسم پر چھوٹے چھوٹے دانے ایک دوسرے سے فاصلے پر نکل آتے ہیں ۔ پیٹ پر، کمر پر، چہرہ، بازو اور ٹانگوں پر۔یہ اگرچہ چیچک نما دانے ہوتے ہیں مگر داغ یا گڑھے پیچھے نہیں چھوڑ جاتے۔ بخارہوجاتا ہے کبھی ہلکا اور کبھی کبھی زیادہ بھی۔ بالعموم یہ بچوں کی بیماری ہے تاہم بعض اوقات بڑوں کو بھی لاکڑا کاکڑا نکل آتا ہے۔ ایک ہفتہ میں دانے خشک ہو کر ختم ہو جاتے ہیں۔ اگر اِس کو دبایا نہ جائے تو خطر ناک مرض نہیں ہے۔ جیسا کہ عرض کیا ہے کہ عام طور پر یہ خطرناک مرض نہیں ہے

بشرطیکہ اِس مرض کو دبایا نہ جائے یعنی اِس کا پراسیس مکمل ہونے دیا جانا چاہئے۔ البتہ ایسے مریض جو پہلے سے کسی دائمی مرض‘ دل یا سانس کی بیماری میں مبتلا ہوں ان میں لاکڑا کاکڑا، چکن پاکس کے باعث پیچیدگیوں کے زیادہ خطرات ہوتے ہیں جو جان لیوا بھی ہو سکتے ہیں۔متاثرہ شخص سے بچاو کیلئے اس کا بستر اور برتن وغیرہ الگ کر دی جائیں، مریض کے استعمال کی چیزیں اور لباس اچھی طرح دھوئے جائیں، مریض کے ساتھ دوسرے بچوں کے میل جول میں احتیاط برتیں اور مریض پبلک مقامات پر جانے سے پرہیز کرے، تیمارداری اور علاج کرتے وقت ماسک کا استعمال کریں تو ہم کافی حد تک اس مرض کے پھیلاو پر قابو پا سکتے ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.