جسمانی گرمی کا پکاتوڑ

قبض ایک عام سی بیماری ہے جو ہر دوسرے انسان کو ہو ہی جاتی ہے ۔ شاید ہم یہ بات نہیں جانتے ہیں

کہ یہ عام سی بیماری قبض بہت سی خطرنا ک بیماریاں ہونے کی ایک اہم وجہ بنتی ہے ۔ اس لیے قبض کو ام امراض بھی کہاجاتا ہے یعنی مدر آف ڈیزیز ۔ صرف ایک قبض سو سے زیادہ بیماریوں کی وجہ وہتی ہے۔ اس کے علاوہ آپ اس رمیڈ ی سے اپنی قوت مدافعت کو بڑھا سکتے ہیں۔ ہڈیوں اور جوڑؤں میں آپ کو آرام ملے گا۔ آخر وہ کیا چیز ہے؟ جس کے اتنے سارے فائدے ہیں۔ آج جو کا استعمال جاننے والے ہیں۔ جو سے عموماً دلیہ ، ستو بھی بنایا جاتا ہے۔ اور اس کا شربت آپ کو مارکیٹ میں عام مل جاتا ہے۔

جو بارلے ڈرنک کے نام سے ہوتا ہے۔ معدے کی گرمی کو دور کرنے کےلیے اس سے کوئی اچھی چیز نہیں ہے۔ جو آپ کو مارکیٹ سے عام مل جاتی ہے۔ جن لوگوں کا نظا م ہاضمہ کمزور ہو۔ بدہضمی رہتی ہو۔ اس کے لیے کسی نعمت سے کم نہیں ہے۔ جو میں موجود ڈائیٹری فائبرز نہ صرف آپ کی آنتو ں کو صحتمند رکھتا ہے۔ بلکہ آنکھوں کی پرفارمنس کو بھی بڑھاتا ہے۔ جو میں موجود لیگزیٹو خصوصیات آپ کو قبض سے محفوظ رکھتی ہیں۔ اس کے علاوہ یہ کھانسی کو بھی ٹھیک کرتی ہے۔ جو کے استعمال سے ہڈیوں کی کمزوری ، ہڈیوں سے کٹ کٹ کی آوازیں آنا بھی ٹھیک ہوجاتا ہے۔ جو کے استعمال سے گنٹھیا اور آرتھڑائیٹس میں بھی بہت فائدہو تا ہے۔

اس غذا کو بچے ، بوڑھے اور جوان سبھی لوگ کھا سکتے ہیں۔ یہ غذائیت سے ایک بھرپور غذا ہے۔ اس کے اور بھی فائدے ہیں۔ کسی کھلے برتن میں جو ڈال کر اچھی طرح سے دھو لیں۔ تاکہ مٹی وغیرہ صاف ہوجائے ۔ اس کے بعد جو کو کسی کپڑے پر ڈال کر سائے میں خشک کرلیں۔ خشک ہونے کے بعد آپ کسی فرائی پین میں یہ سوکھی جو ڈال کر توے پربریاں کرلیں۔ یعنی بھون لیں۔ آج جو کی چائے کے بارے میں بات کریں گے ۔ جو آپ کی کمزور ہڈیوں کو طاقت بھی دے گا۔ اس سے آپ کا نظام ہاضمہ بھی ٹھیک ہوگا۔ معدے میں جتنی بھی گرمی ہوگی ساری گرمی ختم ہوجائےگی۔ اگرآپ کے پاس وقت ہے۔توآپ زیادہ مقدار میں بھی جو کو بھون کر رکھ سکتے ہیں ۔اور روزانہ اسکی چائے بنا کر بھی پی سکتے ہیں۔ جب آپ کو جو کے چٹخنے کی آواز آنے لگے تو سمجھ لیں کہ جو کی ساری نمی خشک ہوجا گئی ہے۔ اب آپ چولہا بند کردیں۔

اور جو کو کڑاہی یا فرائی پین سے نکال لیں۔ اس کے بعد چائے بنانے کے لیے کسی برتن میں جتنے کپ چائے بنانا مقصود ہوتو اتنا پانی ڈال کر یعنی اگر آپ ایک کپ چائے بنانا چاہتے ہیں ۔ توڈیڑھ کپ پانی ڈال دیں۔ جب پانی گرم ہوجائے تو اس پانی میں دوبڑے چمچ بھونے ہوئے جو کے ڈال دیں۔ اور پانی کو اچھی طرح سے ابلنے دیں۔ جب ڈیڑھ کپ پانی میں ایک کپ رہ جائے۔ تو چولہا بند کردیں۔ یہ بہت ہی فائدہ مند چائے ہے ۔ اس کو پینےسے نہ صرف بلڈ پریشر کنٹرول ہوتا ہے ۔ بلکہ دل کی بیماریوں کے لیے ، بے خوابی کے لیے ، شوگر کے کنٹرول کرنے کےلیے یہ بہت ہی بہترین او ر شاندار چائے ہے۔ چولہا بند کرنے کے بعد آپ اس چائے کو چھان لیں۔ اب چائے تیار ہے۔ اب چائے ایسے ہی پسند ہے۔

تو پی سکتے ہیں تو بہتر ہے۔ اگر اس کا ذائقہ ٹھیک کرنا چاہتے ہیں۔تو اس میں تھوڑا سا شہد ملا کر بھی پی سکتے ہیں۔ اس کے علاوہ آپ اس میں کوزہ مصری اور دیسی گڑ بھی شامل کرسکتے ہیں۔ لیکن شوگر کےمریض کسی بھی طرح کا میٹھا نہ ڈالیں۔ اس چائے کا استعمال کرنے کا بہترین وقت صبح نہار منہ ہے۔ لیکن آپ دوپہر کے کھانے سے ایک گھنٹہ پہلے بھی پی سکتے ہیں۔ اس چائے کو پینےسے آپ کی قوت مدافعت بھی ٹھیک رہتی ہے۔ اس کے علاوہ جو مریض لمبےعرصے تک بیماری سے لڑنے کی وجہ سے بھوک کی کمی کا شکار ہوں ۔ وہ لوگ بھی یہ چائے ضرور استعمال کریں۔ اس کے علاوہ پیٹ سے جڑے جتنے بھی مرض ہیں۔ وہ سب ٹھیک ہوجائیں گے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *