سورۃ اخلاص اور سوۃ الکوثر کی اکٹھی طاقت جمعرات کا مجرب وظیفہ ہزاروں سال کا پرانا

آج کا جو وظیفہ ہے وہ ذی الحج کی پہلی جمعرات

حوالے سے ہے بہت ہی آسان سا عمل ہے ایسے اوقات ہیں جس میں آپ نے سورۃ الکوثر ایک مرتبہ پڑھ لینی ہے جب آپ یہ عمل کرتے ہیں اس کے بعد اللہ تعالیٰ آپ کو جنت میں آپکا مقام دیکھا دیں گے ۔ اس کے بعد بیٹھ کر سورۃ الکوثر کو نوے مرتبہ پڑھ لیتے ہیں ایک بار کے اس عمل کے بعد جو بھی اللہ سے حاجت طلب کرتے ہیں اللہ تعالیٰ وہ حاجت ضرور قبول فرمائیں گے ۔ اس کے بعد ان نوافل کو ادا کرنے کے بعد سورۃ الکوثر کو اس طرح سے پڑھ لینا ہے اس عمل کو کرلیں گے تو آپ کی جو بھی حاجت ہوگی اللہ تعالیٰ اس کو قبول فرمائیں گے ۔
جو کوئی بھی ذی الحج کی پہلی جمعرات کو بعد نماز عشاء دو رکوٰۃ نفل اس طرح سے پڑھ لے گا تو انشاء اللہ رب کریم جنت میں اسکا مقام عطاء فرمادیں گے ۔ وہیں پر بیٹھ کر سورۃ الکوثر کو پڑھے گا اس کی جو بھی حاجت ہوگی تو اللہ تعالیٰ سجدے سے سراٹھانے سے پہلے اس کی حاجت کو قبول کریں گے ۔ آپ نے پہلی جمعرات میں نماز عشاء کے بعددورکعت نفل پڑھنی ہے ہر رکعت میں سورۃ الفاتحہ ایک مرتبہ پڑھنی ہے پھرآپ نے سورۃ الکوثر ایک مرتبہ پڑھنی ہے پھر
آ پنے ایک مرتبہ سورۃ الاخلاص پڑھ لینی ہے ۔نہایت توجہ یکسوئی کیساتھ آپ نے یہ عمل کرنا ہے انشاء اللہ اس کے بعد اللہ تعالیٰ آپکو دنیاوی زندگی میں ہی جنت میں آپکا مقام دیکھا دیں گے ۔ ان نوافل کو ادا کرنے کے بعد وہیں پر بیٹھ جانا پھر وہیں بیٹھ کر اول وآخرگیارہ مرتبہ درود شریف پڑھنا ہے پھر 90مرتبہ سورۃ الکوثر پڑھنی ہے سورۃ الکوثر ادا کرنے کے بعد بسم اللہ سمیت پڑھنا ہے ۔سورۃ الکوثر ادا کرنے کے بعد سجدے میں چلے جانا ہے اور سجدے میں جانے کے بعد حاجت طلب کرنی ہے ۔ پہلی جمعرات بھی شب جمعہ بھی کہتے ہیں انشاء اللہ اس میں اللہ تعالیٰ سے اپنی حاجت کو طلب کریں گے<
تو اللہ تعالیٰ حاجت کو ضرور طلب فرمائیں گے ۔ اکابرین نے فرمایا ہے کہ آپ سجدے سے سر اُٹھاتے ہیں تو اللہ تعالیٰ آپکی حاجت کو پورا فرمادیتے ہیں اگر کسی مصلحت کے تحت آپکی حاجت پوری نہ ہو تو پریشان ہونے کی ضرورت نہیں ہے اگلی جمعرات آنے تک آپکی حاجت بضرور پوری کردی جاتی ہے ۔ خواہ آپکی وہ حاجت تجارتی قرض کے حوالے سے خواہ کسی بھی ایسے مقصد کے حوالے سے ہو انشاء اللہ جس مقصد کیلئے کریں گے تو اللہ تعالیٰ اس مقصد میں کامیابی عطاء فرمائیں گے ۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *