سونف کھانے کا صحیح طریقہ اور قیمتی علاج

سونف بلا شبہ ہماری صحت کے لیے اللہ تعالیٰ کی طر ف سے ایک بہت ہی بڑی نعمت ہے ہم اس نعمت کا جتنا بھی شکر ادا کریں کم ہے۔ ویسے تو ہمیں ہر ایک نعمت کا دل کی گہرائیوں سے رب کی بارگاہ میں شکر ادا کر نا چاہیے مگر انسان نا شکرا ہے وہ کبھی بھی شکر ادا نہ کر پا یا اپنے رب کے حضور۔ قدرت نے ہمیں ایسی ایسی چیزوں سے نوازا ہے جن کا استعما ل کر کے ہم نہ صرف طرح طرح کی بیماریوں سے بچ سکتے ہیں بلکہ طرح طرح کے جلدی امراض سے بھی چھٹکارا حاصل کر سکتے ہیں۔ سونف کے استعمال سے ہم بڑی بڑی بیماریاں چٹکیوں میں ٹھیک کر سکتے ہیں۔

لیکن زیادہ تر لوگ نا تو سونف کو استعمال کر نے کا صحیح طریقہ جانتے ہیں اور نہ ہی ان کے فوائد اور نقصانات سے واقف ہیں اور نہ ہی یہ جانتے ہیں کہ کون سی سونف فائدہ مند ہے اور کون سی سونف فائدہ مند نہیں ہے۔ کون سی سونف قدرتی منرلز سے بھرپور ہے اور کون سی سونف سوائے بھوسے کے اور کچھ نہیں۔ توآج ان سب باتوں کے بارے میں جانیں گے اور سونف کو بیماریوں کے مطا بق کرنے کے صحیح طریقے۔ اگر آپ چند رپیوں میں دماغ کو کمپیو ٹر کی طرح تیز کر نا چاہتے ہیں اور معدے کے تمام امراض سے چھٹکارا چاہتے ہیں تو اس کے لیے سونف سے بہتر اور کوئی چیز نہیں ۔ خالص سونف کا ایک چمچ ہر کھانے کے بعد چبانے سے معدے کی گیس تیزابیت اور پیٹ درد اور قبض جیسی امراض ٹھیک ہو جاتی ہیں۔

لیکن اگر آپ کا معدہ کمزور ہے اور کھا نا ہضم نہیں ہوتا اور کھٹی ڈکا آتی ہیں تو اس کے لیے ایک چمچ سونف گڑ کے ساتھ ملا کر کھا نا کھانے کے بعد کھانے سے ان تمام قسم کے مسائلوں سے چھٹکارا حاصل کیا جا سکتا ہے۔ یہ علاج فوری طور پر معدے کی گندی رتبتوں کو صاف کر کے نہ صرف معدے کو مضبوط بنائے گا بلکہ ہاضمے کے نظام کو بھی بوسٹ اَپ کرے گا جب کہ دماغی کمزوری کو بھی تیز کرنے اور نظر کو تیز کرنے کے لیے سونف مسری اور بادام برابر مقدار میں پیس کر سفوف بنا لہیں اب اس سفوف کی بڑی چمچ ایک گلاس نیم گرم دودھ کے ساتھ استعمال کر یں۔ مسلسل ساٹھ دن تک استعمال کر یں آپ کی نظر بھی تیز ہو گی اور دماغ بھی کمپیوٹر کی طرح کام کر ے گا۔ اب آخر میں جو سونف کا استعمال بتاؤں گا۔ وہ بے حد قیمتی اور اثر دار علاج ہے اس کے استعمال سے خواتین میں پریڈ ز کی بے قاعدگی اور دودھ کی کمی جیسے مسائل فوراً ٹھیک ہو جائیں گے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *