چائے پکاتے وقت یہ ایک عام سا دانہ شامل کریںچائے پکاتے وقت یہ ایک عام سا دانہ شامل

اگر آپ کے جوڑوں میں درد ہے سیڑھی اتری نہیں جاتیں ہیں۔ پٹھوں میں کھچاؤ ہے۔ ہڈیوں سے کڑ ک کڑک کی آواز آتی ہے۔ گھٹنوں ، انگلیوں ، کہنیوں کی ہڈیاں چٹختی ہیں۔ تو یہ نسخہ ضرو ر استعمال کریں ۔ بس چائے پکاتے وقت یہ دانہ شامل کریں ۔ گھونٹ گھونٹ چائے پیتے جائیں ۔ جوڑو ں کا درد ختم ہوتا چلا جائےگا۔ اس نسخے کو بنانے کا طریقہ یہ ہے کہ آپ چائے پتی اور چینی ڈال کر یہ چائے بنا لیں۔ جس طرح سے عام طور پر چائے بنائی جاتی ہے۔ پھر اس میں دورتی کے برابر یا چنے کی مقدار کے برابر ہیگ ڈال دیں۔ یہ آپ کو کسی بھی حکیم سے باآسانی سے مل جائے گی۔

اس کو ایک منٹ تک مزید پکنے دیں۔ اور پھر چولہا بند کردیں۔ پھر اس چائے کو چھان کر ایک کپ میں نکال لیں۔ ہیگ والی چائے اب تیار ہے۔ اگر آپ چاہیں تو چینی بھی شامل کرسکتے ہیں ۔ ورنہ چینی نہ ڈالیں۔ پھر اس کو چھان لیں۔ اور ایک کپ میں نکال لیں۔ ہیگ کا رنگ سفید ی مائل زرد ہوتا ہے۔ ہیگ کی بہترین قسم ہیرا ہیگ ہے۔ دوسرا قسم قندھاری ہیگ ہوتی ہے۔ لیکن ہیرا ہیگ کو زیادہ پسند کیاجاتا ہے۔ اور ادویات میں زیادہ تر یہی قسم استعمال ہوتی ہے۔ اس کا ذائقہ تلخ اور بدبو تیز ہوتی ہے۔ یہ دماغی اور اعصابی امراض مثلاً لقوہ ، فالج اور ریشے کی بیماریوں میں نہایت مفید ہے۔

بدن میں گرمی پہنچاتی ہے۔ جوڑوں کے درد میں بھی انتہائی فائدہ دیتی ہے۔ بہت ہی اچھی چیز ہے ۔ نیچرل انگرینڈئینٹ ہے۔ بدن کو چوستی ہے۔ آپ نے کرنا یہ ہے کہ جو چائے تیار کی ہے یہ ایک کپ چائے دن میں ایک وقت پی لیں۔ کسی بھی وقت آپ پی سکتے ہیں۔ یہ نسخہ آپ ہفتے میں تین بار ضرور استعمال کریں ۔ جوڑوں اور کمر کاد رد ایسا ختم ہوگا ۔ جیسا تھا ہی نہیں۔

Sharing is caring!

Comments are closed.